Tuesday, 27 August 2013

باقیات ِ فتاویٰ رشیدیہ


باقیات ِ فتاویٰ رشیدیہ
( فتاویٰ غیر مطبوعہ1000)
محدث دوراں ، افقہ زماں حضرت مفتی رشید احمد گنگوہی ر۔ح
تلاش و تحقیق ، تدوین و ترتیب ، تحشیہ از : مولانا نور الحسن راشد کاندھلوی صاحب
توضیح حواشی : مفتی دارالعلوم دیوبند جناب مفتی سعید احمد پالن پوری صاحب
پیشکش : طوبی ریسرچ لائبریری
معاونین ِ خصوصی : مفتی محمد اقبال صاحب ، مفتی محمد امجد حسین صاحب
BAQIYAAT E FATAWA RASHEEDIYA
Fatawas of : Hazrat Muhaddiz Mufti RASHEED AHMED GANGOHI r.Ah
Research by : Moulana Noor ul Hassan Rashid Kandhelvi
Some explanation : Mufti Mohammed Saeed Ahmed Palanpuri (mufti dar ul uloom deoband )
presented by : TOOBAA RESEARCH LIBRARY
مزید کتب کے لیے ملاحظہ کیجیے صفحہ ّفقہی احکام

7 comments:

Sanaullah Mahmood نے لکھا ہے کہ

آپ کے لئے دل کی گہرائی سے دعا نکلتی ھے جناب

Toobaa.Library نے لکھا ہے کہ

جزاک اللہ ، آپ کی نظر عنایت ہے۔

مکتبہ حجاز نے لکھا ہے کہ

اللہ یجزاکم الجزاء الاوفی اس عمدہ ترین تحفہ کیلئے

Khadim نے لکھا ہے کہ

جزاکم اللہ خیراً
یہ کتاب حضرت مولانا نور البشر محمد نور الحق صاحب کے حکم پر ایڈیٹ کی گئی ہے۔ تمام صفحات کا سائز یکساں کردیا گیا ہے۔ اور سائز 179 م ب سے کم کرکے 79 م ب کردیا گیا ہے۔
صفحہ نمبر 2 اور آخری صفحہ جو مناسب نہیں لگ رہا تھا، اسے معذرت کے ساتھ ہٹادیا گیا ہے۔ باقی صفحات میں لنک رہنے دیا گیا ہے۔ امید ہے سکین کنندگان درگذر فرمائیں گے۔
یہ فائل یہاں سے لی جاسکتی ہے۔
دhttp://nbrnhq.blogspot.com/2014/10/baqiyat-e-fatawa-rashidiyah.html

Toobaa.Library نے لکھا ہے کہ

بہت بہت نوازش ، آپ نے نئے سرے سے محنت کرکے یقیناً کتاب کو مزید بہتر اور استفادہ کے لیئے سہل تر کر دیا ہے ، اک عرض تو آپ کے بلاگ پر ارسال کر دی ہے دوسری یہاں اک جملہ میں پیش ہے ، امید ہے حسن ظن کے تقاضے کے تحت اسے مثبت معانی پر محمول فرمائیں گے
میں شاد ہوں کہ ہوں تو کسی کی نگاہ میں !۔
والسلام

Toobaa.Library نے لکھا ہے کہ

http://www.blogger.com/profile/01447014229607467327
مکتبہ حجاز ،
بہت دیر کی مہرباں آتے آتے

Talha Yousaf نے لکھا ہے کہ

اللہ تعالی جزائے خیر سے نوازے

اگر ممکن ہے تو اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔